Home / پاکستان / امرکزی میڈیا سیل پاکستان شریعت کونسل 03349173562

امرکزی میڈیا سیل پاکستان شریعت کونسل 03349173562

قلمدان

اسلام آباد(29 اگست 2019 )پاکستان شریعت کونسل کے رہنماؤں نے کہا ہے کہ آزاد کشمیر حکومت فوری طور پر مسئلہ کشمیر کے حوالے سے ایک قومی کانفرنس طلب کرے جس میں تمام سیاسی و مذہبی پارٹیوں کے رہنماؤں کو شرکت کی دعوت دی جائے،کشمیر کا مسئلہ دنیا بھر میں اٹھایا جائے،وزیر اعظم عالمی دورے کا آغاز کر کے پوری دنیا کے سامنے بھارت اور مودی کا اصل چہرہ بے نقاب کریں،کشمیر میں جاری مظالم پر رسمی بیانات اور مذمت سے کام نہیں چلے گا،اقدامی انداز اختیار کیا جائے،اینٹ کا جواب پتھر سے دینے کی باتوں کو عملی جامہ پہنانے کا وقت آ گیا،او آئی سی جیسا فورم اگر مظلوم مسلمانوں کے زخموں پر مرہم نہیں رکھ سکتا تو پھر اس کے وجود کی کوئی ضرورت نہیں،مسلم امہ کی نمائندگی کا دم بھرنے والے مسئلہ کشمیر پر توانا آواز بلند کریں،مذہبی قوتیں پہلے بھی کشمیریوں کے ساتھ تھیں اب بھی ان کے شانہ بشانہ ہیں،ٓپاکستان شریعت کونسل کا مشاورتی اجلاس کونسل کے امیر مولانا فداء الرحمن درخواستی کی زیر صدارت جامع مسجد سیدنا عثمان جی ٹن ون اسلام آباد میں منعقد ہوا۔ جس میں شریعت کونسل کے جنرل سیکرٹری مولانا زاہد الراشدی، مولا نا عبدالخالق ہزاروی، مولانا رمضان علوی، مولانا ثناء اللہ غالب،مفتی سیف الدین، مولانا عبدالرؤف محمدی، مولانا سید علی محی الدین، مولانا محمد ادریس، حافظ محمد منیر، حافظ صلاح الدین فاروقی، مولانا عمران سندھو، مولانا یعقوب طارق، مولانا جمیل الرحمن فاروقی، مولانا سعد سعدی، مولانا محمد معاویہ،مولانا صلاح الدین بلتستانی، مولانا ابو بکر عبداللہ، حافظ محمد عثمان فاروق، مولانا تنویر احمد اعوان، مولانا بلال عباسی، مولانا حافظ عبیداللہ اور دیگر علماء کرام نے کثیر تعداد میں شرکت کی، اجلاس میں مولانا فداء الرحمن درخواستی نے مسئلہ کشمیرکی حساسیت پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ کشمیری مسلمان اس وقت ظلم کی چکی میں پس رہے ہیں، ان کا کوئی پرسان حال نہیں، اول درجے میں اس وقت جو کام کرنے کا ہے وہ رجوع الی اللہ اور دعاؤ ں کا اہتمام ہے۔ انہوں نے کہا کہ شریعت کونسل کے پلیٹ فارم سے پوری قوم سے بالعموم اور علمائے کرام سے باالخصوص اپیل کی جائے کہ وہ کشمیری مسلمانوں کیلئے قنوت نازلہ کا اہتمام کریں،اس موقع پر مولانا زاہد الراشدی نے کہا کہ یہ ایک قومی مسئلہ ہے، اس مسئلے کو حکومت اور اپوزیشن کی سیاسی مخاصمت کی بھینٹ نہ چڑھایا جائے۔ انہوں نے یہ تجویز پیش کی کہ آزاد کشمیر حکو مت کی میزبانی میں آل پارٹیز کانفرنس بلا ئی جائے اور دنیا کو مسئلہ کشمیر پر اتفاق رائے سے ایک مضبوط اور مؤثر پیغام دیا جائے، قوم میں بھی اس حوالے سے یکجہتی پیدا کی جائے، اس موقع پر مولانا فداء الرحمن درخواستی نے یہ تجویز پیش کی کہ وزیر اعظم عمران خان کو مسئلہ کشمیر کے حوالے سے متحرک کردار ادا کرنا چاہئے اور پوری دنیا کے دورے کر کے اس مسئلے کی حساسیت اور بھارتی مظالم سے عالمی برادری کو آگاہ کرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم تمام پارلیمانی پارٹیوں کو اعتماد میں لے کر عالمی دورے کا آغاز کریں۔ اور اپنا اثر و رسوخ استعمال کرتے ہوئے دنیا بھر میں کشمیریوں کی آواز پہنچائیں، اجلاس میں یہ تجویز بھی سامنے آئی کہ وزیر اعظم عمران خان جہاں نہ پہنچ سکیں وہاں ایک مشترکہ پارلیمانی وفد بھیجا جائے اور بھارت کا اصل چہرہ دنیا بھر میں بے نقاب کیا جائے۔ اجلاس میں کہا گیا کہ مذہبی قوتوں نے ہمیشہ کشمیریوں کی پشتبانی کی اور اب بھی وہ اپنے کشمیری مسلمان بھائیوں کو کسی مرحلے میں تنہا نہیں چھوڑیں گے، علمائے کرام نے کہا کہ مظلوم کشمیریوں کی حمایت کیلئے حکومت لیت و لعل سے کام لینے کے بجائے اقدامی انداز اختیار کرے، اجلاس میں کہا گیا کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر کے حوالے سے آئینی ترمیم کر کے اقوام متحدہ کی قرار دادوں کو ہوا میں اڑا دیا، اب دنیا کے نقشے پر پھیلے(57)اسلامی ممالک کو اقوام متحدہ سے یہ سوال کرنا چاہئے کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی طر ف سے اس کی رٹ چیلنج کرنے پر اقوام متحدہ نے کیا کیا۔ علمائے کرام نے مطالبہ کیا کہ کشمیر کے مسئلے پر او آئی سی کا اجلاس بھی طلب کیا جائے اور عالمی برادری کو اس حوالے سے فوری اور مؤثر کردار ادا کرنے پر مجبور کیا جائے۔

جاری کردہ:عبدالرؤف محمدی
مرکزی سیکرٹری اطلاعات پاکستان شریعت کونسل

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے