Home / ساہیوال / سانحہ ساہیوال: ایس پی، ڈی ایس پی کے ملوث ہونے کے انکشاف کے بعد تفتیش کا نیا رخ
SAHIWAL NEWS

سانحہ ساہیوال: ایس پی، ڈی ایس پی کے ملوث ہونے کے انکشاف کے بعد تفتیش کا نیا رخ

ساہیوال نیوز: سانحہ ساہیوال میں سی ٹی ڈی کے ایس پی جواد قمر اور ڈی ایس پی آصف کمال کے ملوث ہونے کے انکشاف کے بعد جے آئی ٹی کی تفتیش نیا رخ اختیار کر گئی، زیر حراست سی ٹی ڈی کے 5 ملزمان صفدر حسین، احسن، رمضان، سیف اللہ عابد اور حسنین اکبر کو انسداد دہشت گردی کی عدالت میں گزشتہ روز پیش نہیں کیا گیا.
جے آئی ٹی نے تفتیش کا دائرہ کار مزید وسیع کر دیا ہے. آئندہ 12 گھنٹوں کے اندر دونوں افسران کو گرفتار کر لیا جائے گا. جس کے بعد سوموار کو گرفتاری ڈال کر عدالت میں پیش کیا جائے گا.
واضح رہے کہ 19 جنوری کو جی ٹی روڈ پر پل 55 قادر آباد کے قریب سی ٹی ڈی کی کار پر فائرنگ کے نتیجے میں کار میں سوار لاہور چونگی امرسدھو کا دکاندار مہر خلیل ، اسکی بیوی نبیلہ اور 13 سالہ اریبہ طالبہ ساتویں جماعت اور ڈرائیور ذیشان کو سی ٹی ڈی کے اہلکاروں نے دن دیہاڑے جعلی پولیس مقابلے میں ہلاک کر دیا تھا جس پر ملک بھر میں احتجاج شروع ہو گیا.
حکومت نے اس کی تحقیقات کے لیے جے آئی ٹی بنائی جو آٹھ روز سے تفتیش کر رہی ہے.

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے